saudi arab 111

سعودی عرب میں مقیم(Residence) پاکستانی ہوشیار ہو جائیں۔

(روزنامہ خبر)
سعودی عرب میں مقیم(Residence) پاکستانی ہوشیار ہو جائیں۔
جدہ سعودی عرب میں روزگار(Employment) کی غرض سے 30 لاکھ سے زائد پاکستانی مقیم(Residence) ہیں۔ اکثر پاکستانی سعودی قوانین(Rules) سے بے خبر ہوتے ہیں جس کے باعث اُنہیں کئی مرتبہ ایسے بھاری جرمانوں کا سامنا کرنا پڑ جاتا ہے جو اُن کی بساط (Exactly)سے باہر ہوتا ہے۔ ایک سنگین غلطی جو تارکین کرتے ہیں، وہ یہ ہے کہ اپنے ساتھ اقامہ(Iqama) نہیں رکھتے۔حالانکہ جوازات اور پاکستانی سفارت خانے کی جانب سے کئی مرتبہ پاکستانی تارکین(Expatriates) کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنا اقامہ ہر وقت اپنے ساتھ رکھیں۔
کیونکہ اگر پولیس یا کسی اور متعلقہ(Related) ادارے کی جانب سے کسی تارکِ وطن سے پُوچھ گچھ کے دوران اس سے اقامہ برآمد نہ ہو تو اسے اس سنگین(Serious) خلاف ورزی پر 3000 ریال تک کا جرمانہ بھرنا ہو گا یا پھر قید کی تکلیف کاٹنی(Harvest) ہو گی، بعض صورتوں میں یہ دونوں سزائیں ایک ساتھ بھی دی جا سکتی ہیں۔
اسی طرح اگر تلاشی کے دوران کسی تارکِ وطن سے ایکسپائر
(Expire) اقامہ برآمد ہوا تو اسے پانج سو ریال کا جرمانہ ادا کرنا ہوگا۔
دُوسری مرتبہ اس سنگین(Serious) خلاف ورزی کی صورت میں گرفتاری پر جرمانے کی رقم 1000 ریال تک بڑھا دی جائے گی۔ جبکہ تیسری مرتبہ اس خلاف ورزی کی صورت میں 1000 ریال کے جرمانے کے ساتھ ساتھ مملکت سے ڈی پورٹ(De Port) بھی کر دیا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں